Wednesday, March 3, 2021
malegaontimes

مالیگاؤں: آگرہ روڈ نیا بس اسٹینڈ کے پاس کسانوں کی حمایت میں زبردست مظاہرہ

مالیگاؤں میں کسانوں کی حمایت میں آگرہ روڈ پر چکا جام کیا گیا جبکہ اس موقع پر مودی حکومت کے خلاف نعرے بازی بھی کی گئی۔ اس موقع پر راشٹریہ مسلم مورچہ کے رہنما یوسف الیاس نے بتایا کہ ’نئے زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کسان گذشتہ 68 دنوں سے احتجاج کر رہے ہیں‘۔ انہوں نے مودی حکومت سے زرعی قوانین کو فوری طور پر منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا‘۔کسان تحریک کے لیڈروں نے 6 فروری کو ملک بھر میں دوپہر 12 تا 3 بجے تک چکا جام پروگرام کا اعلان کیا تھا جس کی حمایت میں آج مالیگاؤں میں نیا بس اسٹینڈ کے قریب مظاہرہ کیا گیا۔

وہیں ضلع ناسک میں راشٹریہ مسلم مورچہ کے صدر یوسف الیاس اور مالیگاؤں کے صدر اکبر سیٹھ اشرفی کی قیادت میں مہاراشٹر کے مسلم اکثریتی شہر مالیگاؤں میں واقع جونا آگرہ روڈ پر نیا بس اسٹینڈ کے قریب 12 بجے راستہ روکوں احتجاج منظم کیا گیا۔راشٹریہ مسلم مورچہ (ضلع ناسک) کے صدر یوسف الیاس نے ای ٹی وی بھارت کو بتایا کہ اگر کسانوں کے مطالبات کو قبول نہیں کیا جاتا ہے تو گلی سے دہلی تک مرکزی حکومت کے خلاف احتجاج منظم کیا جائے گا۔



راشٹریہ مسلم مورچہ کی جانب سے کسان تحریک کی حمایت میں ہونے والے احتجاجی مظاہرہ میں کل جماعتی تنظیم، سنی کونسل، سنی جمیت الاسلام، ہندوستانی کمیونسٹ پارٹی، مارکس وادی کمیونسٹ پارٹی، جنتادل سیکولر، عام آدمی پارٹی، راشٹریہ جنتادل، ادارہ اکمل رمضان پورہ، سنی تعزیہ کمیٹی اور دیگر تنظیموں سے وابستہ ارکان نے حصہ لیا۔

mt ads

error: Content is protected !!