Friday, February 26, 2021
malegaontimes

عظیم کھلاڑی اختر علی چل بسے

مغربی بنگال کی راجدھانی کولکاتا کے پارک سرکس میں واقع اپنی رہائش گاہ پر بھارتی ٹینس کے سابق اسٹار کھلاڑی اختر علی کا انتقال ہو گیا۔ وہ 81 برس کے تھے اور وہ لمبے عرصے سے کڈنی کی بیماری میں مبتلا تھے۔ ان کی موت پر بھارتی ٹینس فیڈریشن نے تعزیت پیش کی ہے۔

ذرائع کے مطابق سابق ٹینس اسٹار اختر علی گزشتہ کئی دنوں سے جنوبی کولکاتا کے ایک نجی ہسپتال میں زیر علاج تھے۔ انہیں گزشتہ روز سنیچر کو پرائیویٹ ہسپتال سے گھر لایا گیا تھا اور اتوار کی دیر رات اختر علی چل بسے۔

انڈین ٹینس کی تاریخ میں اختر علی کا نام بہت بڑا ہے. 1958 میں انہوں نے انڈیا کی جانب سے کھیلنا شروع کیا اور 1968 تک یہ سلسلہ جاری رہا۔ اختر علی کو ڈیوس کپ میں بھارتی ٹیم کی نمائندگی کرنے کا موقع بھی ملا اور انہوں نے بھارت کی جانب سے ڈیوس کپ میں کھیلتے ہوئے اپنی صلاحیت کا لوہا منوایا۔



اختر علی نہ صرف ایک کامیاب ٹینس کھلاڑی تھے بلکہ ایک تجربہ کار کوچ بھی رہے ہیں. جن کی نگرانی میں لینڈر پیس سمیت دیگر اسٹار کھلاڑیوں کو تربیت حاصل کرنے کا موقع ملا۔ بھارت کے سابق ٹینس اسٹار اور کوچ اختر علی کے انتقال پر بھارتی ٹینس فیڈریشن نے تعزیت پیش کی.

فیڈریشن نے کہا کہ بھارت ایک عظیم کوچ سے محروم ہو گیا۔ سابق ٹینس کھلاڑی جے دیپ مکھرجی نے کہا کہ اختر صاحب ایک کامیاب کھلاڑی اور کوچ ہونے کے ساتھ ساتھ ایک اچھے انسان بھی تھے۔ انہوں نے کہا کہ سابق ٹینس کھلاڑی نے ہر ذمہ داری کو کامیابی سے نبھانے کی کوشش کی اور اس میں انہیں کامیابی بھی ملی۔

mt ads

error: Content is protected !!