Wednesday, March 3, 2021
malegaontimes

اویسی پانچ سیٹ جیتیں گے مگر 25 بی جے پی کو جیتائیں گے: یوپی کے سابق وزیر کا دعوی

اگلے سال اترپردیش کے 2022 میں ہونے والے اسمبلی انتخابات میں اقتدار میں واپس آنے کا خواب دیکھنے والی سماج وادی پارٹی کو ایک جھٹکا لگ سکتا ہے۔کیونکہ اسد الدین اویسی کی پارٹی آل انڈیا اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) نے یوپی میں داخلہ لے لیا ہے۔وہ یوگی کے سابق وزیرراج بھرکے ساتھ الیکشن لڑیں گے لیکن امیدہے کہ راج بھردوچارسیٹیں جیتنے کے بعداسی طرح بی جے پی کے ساتھ چلے جائیں گے جس طرح اویسی کے وزیراعلیٰ امیدوار اوپیندرکشواہا اورمایاوتی کے ایم ایل اے بہارمیں این ڈی اے میں جارہے ہیں۔مایاوتی اورکشواہاکے امیدواروں کے لیے اویسی نے تشہیرکی تھی۔لیکن یہ دونوں بی جے پی کے قریبی سمجھے جاتے ہیں۔ اب یوپی میں بھی وہی بات دوبارہ نہ ہوجائے اس کے خوف نے سماج وادی پارٹی کو بھی پریشان کرنا شروع کردیا ہے۔

پارٹی کے بڑے رہنمابھی اب کھلے دل سے یہ مان رہے ہیں کہ اویسی اقتدار تک جانے کی راہ روک سکتے ہیں پیر کے روز بارہ بنکی میں سابق وزیرحاجی فرید محفوظ قدوائی نے کہاہے کہ اگر وہ (اویسی) 5 سیٹیں جیت جاتے ہیں تو ہم 25 نشستوں سے محروم ہوسکتے ہیں۔ ایسا ہی مہاراشٹر اور بہار میں ہوا ہے۔ جس نے ثابت کیا ہے کہ یہ بی جے پی کے لیے معاون ہیں۔ سابق وزیرکی اپنے اسمبلی حلقے میں دعویداروں کے سیلاب کے سوال پر انہوں نے کہاہے کہ اچھی نشست پر زیادہ دعویدار ہوتے ہی ہیں اور وہ 5 بار ایم ایل اے رہ چکے ہیں۔ اب انھیں ایم ایل اے بننے کی خواہش نہیں ہے ۔ لیکن اگر پارٹی انھیں یہ ذمہ داری دیتی ہے توپھر یہ نشست وہ جیت جائیں گے۔

error: Content is protected !!