Friday, February 26, 2021
malegaontimes

اگر ویوو معاہدہ توڑنے سے فائدہ اٹھاتا ہے، تو بی سی سی آئی معاہدہ جاری رکھے گا

بدھ کے روز بی سی سی آئی کے ایک سینئر عہدیدار نے کہا کہ اگر آئی پی ایل کے ٹائٹل اسپانسر  Vivo کو  ‘معاہدے کے خاتمے کے ‘ سے فائدہ ہوا تو بی سی سی آئی کا چینی موبائل کمپنی کے ساتھ معاہدہ ٹوٹنے کا امکان نہیں ہے۔  تاہم ،انہوں نے یہ  انکشاف نہیں کیا کہ، اس لیگ کی گورننگ کونسل کا اجلاس اس کا جائزہ لینے کی شروعات کب کریگی۔

مشرقی لداخ میں پرتشدد تصادم کے بعد ، مرکزی حکومت نے متنازعہ ٹکٹ ٹاک سمیت چین کے 59  ایپس پر پابندی عائد کردی ہے ۔  بی سی سی آئی نے 15 جون کے واقعے کے فورا بعد ہی کہا تھا کہ آئی پی ایل کے اسپانسرز کا جائزہ لیا جائے گا۔

 انہوں نے مزید کہا ، ‘ہم نے کہا کہ ہم معاہدہ  کا جائزہ لیں گے۔  جائزہ لینے کا مطلب یہ ہے کہ ہم معاہدے کی تمام شکلوں کی جانچ کریں گے۔  اگر معاہدے کو ختم کرنے کا اصول VIVO کے حق میں جاتا ہے تو پھر ہم کیوں سالانہ 440 کروڑ روپے کے معاہدے سے دستبردار ہوجائیں؟  ہم اس کا خاتمہ تب ہی کریں گے جب ‘معاہدے کو ختم کرنے کا اصول’ ہمارے حق میں ہو۔


error: Content is protected !!