Friday, February 26, 2021
malegaontimes

بی جے پی ورکرز نے کیا ترنمول کانگریس رکن اسمبلی کے گھر پر حملہ

بی جے پی کے ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے لئے فنڈ جمع کرنے کے سلسلے میں پارکل سے ٹی آر ایس کے ایم ایل اے چالہ دھرم ریڈی کے بیان کے بعد مشتعل بی جے پی کارکنوں نے رکن اسمبلی کی رہائش گاہ پر حملہ کیا جس سے علاقے میں کشیدگی پھیل گئی۔ بی جے پی کے متعدد کارکنان ہنماکنڈا میں ایم ایل اے کی رہائش گاہ پہنچے اور مبینہ طور پر پتھراؤ کیا اور انڈے مارے۔ پولیس فورس کو علاقے میں متحرک کیا گیا اور تناؤ برقرار رہا۔

اتوار کے روز ٹی آر ایس قانون ساز نے بی جے پی قائدین کو ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے نام پر تلنگانہ سے 1000 کروڑ اکٹھا کرنے کے لئے چلائی جانے والی مہم پر طنز کیا۔ یہ واضح کرتے ہوئے کہ وہ بھی ہندو ہیں انہوں نے کہا کہ بی جے پی قائدین ملک کی تمام ریاستوں سے 29000 کروڑ اکٹھا کرکے کیا کریں گے اور اس معاملے پر بھگوا پارٹی رہنماؤں کی طرف سے وضاحت طلب کی جائے گی۔انہوں نے الزام لگایا کہ ریاست میں بی جے پی قائدین نے جو چندہ جمع کیا ہے اس کا پتہ کسی کو نہیں ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ بی جے پی قائدین بغیر کسی احتساب کے رام مندر کے نام پر چندہ جمع کررہے ہیں اور بھگوا پارٹی کے رہنماؤں سے پوچھا کہ یہ رقم کہاں ہے جسے جمع کیا جا رہا تھا.

انہوں نے یہ بھی الزام لگایا کہ بی جے پی قائدین شری رام کا نام استعمال کرکے جھوٹی سیاست کررہے ہیں۔ مندر کی تعمیر کے معاملے پر وزیر اعظم نریندر مودی کو نشانہ بناتے ہوئے انہوں نے وزیر اعظم سے پوچھا کہ جس نے دریائے نرمدا کے کنارے پر سردار والا بھائی پٹیل کے مجسمے کی تعمیر کے لئے 3000 کروڑ عوام کی رقم خرچ کی ہے ، کیا وہ مندر کی تعمیر کےلئے ایسی ہی پلاننگ نہیں کرسکتے..

error: Content is protected !!