Friday, March 5, 2021
malegaontimes

سی بی ایس ای: بارہویں بورڈ کا رزلٹ، لگاتار چھٹے سال لڑکیاں لڑکوں سے آگے

سنٹرل بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن (سی بی ایس ای) نے پیر کے دوپہر 12 ویں بورڈ کے نتائج جاری کردیے۔ 15 فروری سے 30 مارچ کے درمیان ہونے والے کورونا بحران کے دوران  امتحان میں مجموعی طور پر 11 لاکھ 92 ہزار 961 طلباء شریک تھے اور ان میں سے 10 لاکھ 59 ہزار 80 پاس ہوئے ہیں۔ کل پاس کی شرح 88.78 فیصد رہی ہے جو 2019 کے مقابلے میں 5.38% زیادہ ہے۔ اس سال کے نتائج میں بھی لڑکیاں لڑکوں سے 9.5% فیصد سے آگے تھیں۔ لڑکیوں کا پاس فیصد 92.15 تھا جب کہ لڑکیوں کا فیصد 86.19 رہا۔

لڑکیوں نے بارہویں کے نتائج میں لڑکوں کو لگاتار چھٹی بار شکست دی۔ 2014 میں سرٹھک اگروال آخری بار بورڈ کے امتحان میں 99.6 فیصد کے ساتھ ٹاپ رہے تھے۔ تب سے لڑکیاں مسلسل چھ سالوں سے ٹاپ رہی ہیں۔ پچھلے سال ٹاپ بنسیکا شکلا نے کل میں سے صرف ایک کٹوتی کی تھی۔ وہ پولیٹیکل سائنس ، ہسٹری، سائیکالوجی اور ووکل میوزک میں 100 میں سے 100 اور انگریزی میں 100 میں سے 99 پر تھی۔

پچھلے سال نتائج 2 مئی کو آئے تھے لیکن اس سال لاک ڈاؤن کی وجہ سے جولائی میں آرہا ہے۔ اس بار بورڈ کورونا لاک ڈاؤن کیی وجہ سے پیدا ہونے والا حالت کی وجہ سے بقیہ امتحان نہیں ہوپا ئے۔ اسی وجہ سے میرٹ کی فہرست اور ٹاپرز کی فہرست بھی جاری نہیں کی جارہی ہے۔


automobile-ad


malegaontimes ads

error: Content is protected !!