Thursday, February 25, 2021
malegaontimes

حاملہ بھوکے ہاتھی کو لوگوں نے پٹاخوں سے بھرا انناس کھلادیا ، تکلیف کی وجہ سے دم توڑ دیا

ترواننت پورم : کیرالہ میں ایک دل دہلا دینے والا واقعہ سامنے آیا ہے ، جسے پڑھ کر آپ کے ہوش اڑ جائینگے۔ یہاں کچھ لوگوں نے انناس میں پٹاخے ڈال کر حاملہ بھوکے ہاتھی کو کھانا کھلایا۔  یہ پٹاخے ہاتھی کے منہ میں پھٹ پڑے اور اس سے ہاتھی کے ساتھ ہی اس کی کوکھ میں بچہ بھی ہلاک ہوگیا۔

  اس غیر انسانی واقعہ کو محکمہ جنگلات کے ایک ملازم نے کیمرے میں  قید کرلیا۔  اب اس واقعے کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی ہے ، جس کے بعد لوگوں میں سخت غم و غصہ پایا جارہاہے۔  ملزمان کوسخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔

 مرکزی وزیر ماحولیات پرکاش جاوڈیکر نے ایک بیان میں کہا کہ وزارت ماحولیات نے کیرالہ میں ہاتھی کی موت کو سنجیدگی سے لیا ہے۔  اس واقعے سے متعلق مکمل رپورٹ طلب کی گئی ہے۔  مجرم کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ یہ ایسا واقعہ  ہے جو انسانیت کو شرمندہ کرتا ہے۔

 یہ شرمناک واقعہ کیرالہ کے ضلع مالپورم میں پیش آیا ہے،   یہاں ایک حاملہ بھوکا ہاتھی کھانے کی تلاش میں جنگل سے نکلا تھا۔  وہ کھانے کی تلاش میں گاؤں میں گھوم رہی تھی،   ایسی صورتحال میں کچھ مقامی لوگوں نے اس کے ساتھ بدتمیزی کی اور انناس میں پٹاخے  بھر کر اسے کھلادیا۔   بھوک کی وجہ سے ، ہاتھی نے انناس کھا لیا اور جلد ہی پٹاخے پھٹنے لگے اور پٹاخوں سے زخمی ہاتھی وہاں گر گیا۔

 اس واقعہ کے بارے میں کچھ لوگوں نے محکمہ جنگلات کو آگاہ کیا،  اطلاع کے بعد ریسکیو ٹیم پہنچ گئی اور ہاتھکو لے کر چلی گئی ، لیکن اسے بچایا نہیں جاسکا۔  ہاتھی راستے میں ہی دم توڑ گیا اور اس کے ساتھ ہی بچہ بھی  فوت ہوگیا۔  ان مناظر کو دیکھ کر ، ریسکیو ٹیم کی آنکھوں سے آنسو  آگئے۔

 جنگلاتی عہدیدار  کیمطابق حملہ درج کرلیا گیا ہے اور تفتیش شروع کردی گئی ہےہم چاہتے ہیں کہ ایسے لوگوں کو کڑی سزا دی جائے۔  ایسے لوگوں کے خلاف ہاتھیوں کے شکار کے قانون کے تحت کارروائی کی جاتی ہے۔


error: Content is protected !!