Sunday, March 7, 2021
malegaontimes

مالیگاؤں: کل دوپہر 12 بجے نئے بس اسٹینڈ کے کسانوں کی حمایت میں چکاجام، کئی تنظیموں کی شرکت

ملک کے کسان اپنی زمینوں کو بچانے کیلئے اور نئے ظالمانہ زرعی قوانین کو ختم کروانے کیلئے 68 سے زائد دنوں سے دہلی کی سرحدوں پر دھرنا احتجاج کر رہے ہیں.ملک کی عوام کو اناج مہیا کرانے والے ان کسانوں کے مطالبات منظور کیے جائیں اس مقصد کے تحت کل مورخہ 6 فروری بروز سنیچر دوپہر 12 بجے سے 3 بجے تک پورے ملک میں چکّا جام کرنے کا اعلان کسان تنظیموں نے کیا ہے ملک بھر کی سینکڑوں تنظیموں اور پارٹیوں کے ساتھ بام سیف کی ذیلی تنظیموں نے بھی جناب وامن مشرام صاحب اورحضرت مولانا خلیل الرحمٰن سجاد نعمانی صاحب کی قیادت میں حمایت کا اعلان کیا ہے.

اسی بنیاد پر راشٹریہ مسلم مورچہ کے آل انڈیا صدر حضرت مولانا عبدالحمید ازہری صاحب کے حکم پر پورے ملک میں 500 سے زیادہ ضلعوں میں دیے گئے وقت پر چکّا جام کیا جائے گا.اسی کے ساتھ ہی ناسک ضلع راشڑیہ مسلم مورچہ کے صدر الحاج یوسف الیاس صاحب اور مالیگاؤں کے صدر اکبر سیٹھ اشرفی کی قیادت میں مالیگاؤں شہر کے جونا آگرہ روڈ پر نئے بس اسٹینڈ کے پاس ٹھیک 12 بجے راستہ روک کر چکّا جام کیا جائے گا.



راشڑیہ مسلم مورچہ کی جانب سے کسان آندولن کی حمایت میں ہونے والے اس چکّا جام تحریک کو کل جماعتی تنظیم، سنی کونسل،سنی جمیت الاسلام، ہندوستانی کمیونسٹ پارٹی، مارکس وادی کمیونسٹ پارٹی، جنتا دل سیکولر، عام آدمی پارٹی، راشٹریہ جنتا دل،ادارہ اکمل رمضان پورہ، سنی تعزیہ کمیٹی، اور دیگر تنظیموں نے حمایت دی ہے.

لہٰذا شہر کے انصاف پسند نوجوانوں اور عوام سے گزارش ہے کہ مودی حکومت کے ظالمانہ قانون کے خلاف ہونے والی چکّا جام تحریک میں شرکت کیلئے بروز سنیچر صبح 11 بجے حسین سیٹھ کمپاؤنڈ میں جمع ہوں. ایسی گزارش راشٹریہ مسلم مورچہ کے ریاستی رکن صوفی نورالعین صابری صاحب، شمالی مہاراشٹر کے سیکرٹری جاوید انور، شہری نائب صدر محمد عارف نوری اور عام آدمی پارٹی کے الطاف کرانہ والا صاحب نے کی ہے..

mt ads

error: Content is protected !!