Saturday, February 27, 2021
malegaontimes

چار ہزار کروڑ کے پونزی گھوٹالہ کے ملزم آئی ایس افسر بی ایم وجے شنکر کی موت

آئی ایس افسر بی ایم وجے شنکر منگل کی رات بنگلور میں واقع اپنی رہائش گاہ میں مردہ پائے گئے۔ ایک سینئر پولیس افسر نے یہ اطلاع دی۔ سی بی آئی 4000 کروڑ روپے کے آئی ایم اے پونزی گھوٹالہ میں شنکر پر قانونی چارہ جوئی کرنا چاہتی تھی۔ وجے شنکر پر الزام ہے کہ انہوں نے مبینہ طور پر آئی ایم اے پونزی گھوٹالہ پر پردہ ڈالنے کے لیے رشوت لی تھی۔ کرناٹک کی سابق وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی کی زیر قیادت مخلوط حکومت نے 2019 میں ایک خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی تھی جس نے شنکر کو گرفتار کیا تھا۔

سی بی آئی نے اس معاملے میں دو سینئر آئی پی ایس افسران کے خلاف قانونی کارروائی کے لیے ریاستی حکومت سے اجازت بھی طلب کی تھی۔ پونزی گھوٹالہ کے مرکزی ملزم محمد منصور خان نے 2006 میں آئی ایم اے کے نام سے ایک کمپنی کھولی تھی۔ یہ کمپنی کرناٹک کے دار الحکومت بنگلورو سمیت چند اضلاع میں کام کررہی تھی۔ کمپنی نے لوگوں کو سرمایہ کاری کے نام پر دھوکہ دینا شروع کیا۔ اس کمپنی پر الزام لگایا گیا تھا کہ وہ لوگوں کو 17 سے 25 فیصد کا لالچ دے کر رقم لگاتے ہیں لیکن جب واپسی دینے کا وقت آیا تو کمپنی کا مالک منصور خان دبئی فرار ہوگیا۔ تاہم بعد میں ان کو انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) نے گرفتار کرلیا۔

Ad:


free-home-delivery


error: Content is protected !!