Friday, February 26, 2021
malegaontimes

چین نے ایک بار پھر بھارت کے ساتھ غداری کی، 20 جوان شہید

چین نے ایک بار پھر بھارت کے ساتھ غداری کی ہے۔  مشرقی لداخ میں چین نے  ہندوستانی فوجیوں پر حملہ کیا ، جس میں 20 فوجی شہید ہوگئے ہیں۔ یہ ایک بڑی سازش کے تحت چینی فوج نے دھوکہ دہی سے ہمارے فوجیوں پر حملہ کیا ہے۔

 در حقیقت ، لائن آف  کنٹرول (ایل اے سی) پر کشیدگی کے درمیان ، یہ فیصلہ کیا گیا تھا کہ ، مضافات میں چینی فوج کی نقل و حرکت کو کم کیا جائے گا۔  چینی فوج گالان کے علاقے میں اپنی سرزمین  پر لوٹ آئے گی۔  دونوں فریقوں نے پیشگی اتفاق کیا تھا کہ بھارتی فوج کے اعلی افسران کے اجلاس سے قبل چینی فوج پیچھے ہٹ جائے گی۔

 لیکن اس معاہدے کے باوجود ، جب چینی فوج میں کوئی کاروائی دیکھنے میں نہیں آئی ،  بہار رجمنٹ کے کرنل سنتوش بابو کی سربراہی میں ہندوستانی فوج کا ایک چھوٹا دستہ چینی فریق کے ساتھ بات چیت کرنے گیا۔  چینی فوج اس بحث کے دوران پیچھے ہٹنے کے موڈ میں نہیں دکھائی دی۔  وہ جان بوجھ کر گریز کرتے رہے۔

 بتایا جاتا ہے کہ اس کے بعد ، چینی فوج نے ہندوستانی فوجیوں کو گھیر لیا اور ان پر لاٹھیوں ، پتھروں اور خاردار تاروں سے حملہ کرنا شروع کردیا۔  اس جھڑپ کے دوران ، ایک ہندوستانی جوان کے مقابلے میں 3 چینی فوجی موقع پر موجود تھے ، لیکن اس کے باوجود ، ہندوستانی فوجیوں کو نہ صرف اس اچانک حملے کا سامنا کرنا پڑا ، بلکہ اس کا بھرپور جواب بھی دیا گیا۔

 تقریبا 3  گھنٹے تک دونوں اطراف میں جھڑپیں ہوئیں۔  اس جھڑپ میں کمانڈنگ آفیسر سنتوش بابو کو شدید چوٹیں آئیں۔  تصادم شروع ہونے کے بعد ، ہندوستانی فوجیوں کی ایک دوسری ٹیم موقع پر پہنچی اور تب بھارت نے چین کی اس دھوکہ دہی کا بھرپور جواب دیا۔  بتایا جاتا ہے کہ چینی فوج کو بھارتی فوج کی جوابی کارروائی میں بھاری نقصان اٹھانا پڑا۔

 خبر رساں ادارے اے این آئی کے مطابق ، اس پُرتشدد جھڑپ میں 43 چینی فوجی ہلاک ہوگئے ہیں۔  تاہم ، چین کی طرف سے اس کی تصدیق نہیں کی گئی ہے۔  دہلی میں ، وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے مشرقی لداخ کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے  بپن راوت اور تینوں فوج کے سربراہوں کے ساتھ ایک میٹنگ کی۔  وزیر خارجہ ایس شنکر بھی اس میٹنگ میں موجود تھے۔

 اس ملاقات کے بعد وزیر اعظم کی رہائش گاہ پر ایک اعلی سطحی اجلاس بھی ہوا ، جس میں وزیر اعظم نریندر مودی نے وزیر داخلہ امیت شاہ اور وزیر خارجہ ایس شنکر سے صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔  آرمی چیف جنرل نے لداخ میں بگڑتی ہوئی صورتحال کے پیش نظر اپنا پٹھان کوٹ کا دورہ منسوخ کردیا۔


error: Content is protected !!