Wednesday, March 3, 2021
malegaontimes

جموں کشمیر میں ایک مہینہ کے اندر پانچویں بار زلزلے کے شدید جھٹکے

شری نگر : ہفتہ کے روز جموں و کشمیر میں زلزلے کے شدید جھٹکے محسوس کیے گئے۔ زلزلہ کے قومی مرکز نے بتایا کہ زلزلے کے جھٹکے جموں و کشمیر میں ہینلے سے 332 کلومیٹر شمال مشرق میں محسوس کیے گئے۔ 9 جون سے ریاست میں 5 بار زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے ہیں۔ جمعہ کو ملک میں تین زلزلے آئے تھے۔ ہریانہ اور میگھالیہ کے بعد لداخ میں تیسرا زلزلہ آیا۔ نیشنل سینٹر فارسیسمولوجی کے مطابق لداخ میں اس زلزلے کا مرکز کارگل سے 200 کلومیٹر شمال مغرب میں واقع تھا۔ جمعہ کی رات 8 بج کر 15 منٹ پر آنے والے اس زلزلے کی شدت 4.5 تھی۔ تاہم اس میں کسی کے جانی نقصان کی کوئی خبر نہیں ہے۔ اس سے قبل شام کو میگھالیہ میں بھی زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے۔

واضح ہوکہ گزشتہ روز میزورم میں آنے والے زلزلے کے بعد جمعہ کے روز میگھالیہ میں زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے تھے۔ جمعہ کے روز اس کا مرکز میگھالیہ میں تورا سے 79 کلومیٹر مغرب میں تھا۔ زلزلے کی شدت پیمانے پر 3.3 تھی۔ جمعہ کو ہریانہ اور دہلی کے نواح میں بھی زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق زلزلے کا مرکز روہتک تھا۔ ریکٹر اسکیل پر زلزلے کی شدت 2.8 ریکارڈ کی گئی ہے اور اس نے زمین میں 10 کلو میٹر کی گہرائی کو نشانہ بنایا ہے۔ اگرچہ اس وقت تک کسی قسم کی جانی و مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے لیکن صدمے کے احساس کے ساتھ لوگوں میں خوف و ہراس کا ماحول ہے۔

منگل کے روز میزورم میں 3.7 شدت کا زلزلے کا جھٹکا محسوس کیا گیا۔ ریاست میں یہ مسلسل تیسرا دن ہے جب زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے ہیں۔ عہدیداروں نے بتایا کہ منگل کو محسوس کیے جانے والے جھٹکے کی وجہ سے ریاست میں کسی قسم کی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ انہوں نے بتایا کہ دار الحکومت اعزال میں بھی ایک جھٹکا محسوس کیا گیا۔ نیشنل سیسمولوجی سینٹر نے ٹویٹ کیا کہ “منگل کے روز شام 7:17:37 پر 23.22 عرض البلد اور 93.4 عرض کے درمیان 3.7 شدت کا زلزلہ محسوس کیا گیا۔


free-home-delivery


error: Content is protected !!