Thursday, February 25, 2021
malegaontimes

نان گرانٹ مدارس کو ممتا بنرجی نے دیا 50 کروڑ کی مالی مدد کا تحفہ

مغربی بنگال کی اسمبلی میں آج ریاستی حکومت نے عبوری بجٹ پیش کیا۔ وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے ریاست کے نان گرانٹ تصدیق شدہ مدارس کے متعلق ایک اہم اعلان کرتے ہوئے یہ جانکاری دی کہ ایسے مدارس کو حکومت نے 50 کروڑ کی مالی مدد دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ریاست میں ایسے سینکڑوں مدارس بھی ہیں جو تصدیق شدہ نان گرانٹ ہیں مگر ان کو حکومت کی طرف سے کوئی مالی امداد نہیں ملتی ہے۔



ایسے مدارس کو حکومت کی طرف سے رواں مالی سال میں 50 کروڑ کی مالی مدد دینے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ ان مدارس کو بعد میں گورنمنٹ گرانٹیڈ مدارس کا درجہ بھی دیا جائے گا۔ملن اتسو کے دوران بھی اس کی جانکاری دیتے ہوئے ترنمول کانگریس کے ندیم الحق نے کہا کہ وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے اعلان کیا ہے کہ نان گرانٹ مدارس کو حکومت کی طرف سے مالی مدد ملے گی۔ لیکن گذشتہ 24 دنوں سے دھرنے پر بیٹھے ہیں ان کا مطالبہ ہے کہ ان مدارس کو مڈ ڈے مل اور اساتذہ کو تنخواہ دی جائے۔

نان گرانٹ مدرسہ ٹیچرس ایسوسی ایشن کے ریاستی صدر شیخ جاوید میاں داد کا کہنا ہے کہ وزیر اعلی ممتا بنرجی نے آج اعلان کیا ہے کہ ان ایڈیڈ مدارس کو 50 کروڑ کی مالی مدد دی جائے گی۔ یہ روپئے حکومت ان مدارس کو بنیادی ڈھانچہ تیار کرنے کے لئے دے رہی ہے۔ لیکن وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی اپنی تقریر میں نان گرانٹ مدرسہ ٹیچرز کی تنخواہ اور مڈ ڈے میل اور دوسری سرکاری سہولیات پر کوئی بات نہیں کی ہے اس لئے ہماری تحریک جاری رہے گی۔

mt ads

error: Content is protected !!