Friday, February 26, 2021
malegaontimes

آن لائن شاپس پر اب نہیں ہوگی چائنا کی اشیاء کی خرید و فروخت

دہلی : ملک بھر میں چلنے والی چینی مصنوعات کی بائیکاٹ مہم کے بیچ حکومت نے اب ایک نئی تجویز دی ہے۔ کنفیڈریشن آف آل انڈیا ٹریڈرز (CAT) نے حکومت کو بتایا ہے کہ آن لائن کمپنیوں کے ذریعہ فروخت کی جانے والی مصنوعات پر بھی دھیان دینا چاہیے کہ وہ کس ملک میں بنتی ہیں۔ کیٹ کا کہنا ہے کہ بیشتر ای کامرس کمپنیوں میں چینی مصنوعات فروخت ہورہی ہیں۔

تجارتی تنظیم نے مرکزی وزیر تجارت پیوش گوئل کو مشورہ دیا ہے کہ ان کمپنیوں کے لیے ایسا کرنے کی فراہمی ضروری بنائی جائے۔ ویب سائٹ zeebiz.com کے مطابق کیٹ کے جنرل سکریٹری پروین کھنڈیل وال نے کہا کہ اس سے صارفین کو سامان خریدنا ہے یا نہیں اس بارے میں فیصلہ لینا آسان ہوجائے گا۔ تنظیم کے مطابق بیشتر ای کامرس پورٹل چین میں تیار کردہ مصنوعات فروخت کرتے ہیں۔ لیکن صارفین اس سے واقف نہیں ہیں۔ ایسی صورتحال میں وہ صارفین جو چینی سامان کا بائیکاٹ کرنا چاہتے ہیں وہ ایسا کرنے کے قابل نہیں ہیں۔

حکومت ہند کے ایک عہدیدار کے مطابق چین کو گھیرنے کی تیاری کرلی گئی ہے۔ اس کے لیے چین کو معاشی محاذ پر سب سے زیادہ تکلیف ہوگی۔ اس کے لیے حکومت کی جانب سے مایک مکمل بلیو پرنٹ بھی تیار کی گئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ہندوستان آنے سے قبل چینی کمپنیوں کی سخت تحقیقات کی جائیں گی۔

Ad:


free-home-delivery


error: Content is protected !!