malegaontimes

آزاد بھارت کی تاریخ میں پہلی بار کسی خاتون کو پھانسی دی جائے گی

آزاد ہندوستان کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے جب کسی خاتون قیدی کو پھانسی دی جائے گی۔ امروہہ میں رہنے والی شبنم کو اترپردیش کی متھرا میں پھانسی کے ذریعے موت کی سزا دی جائے گی۔پھانسی دینے کے لیے تیاریاں شروع کردی گئی ہیں۔ تاہم ابھی تک پھانسی کی تاریخ طے نہیں ہوئی ہے۔

معاملہ یہ ہے کہ اپریل 2008 میں امروہہ کی رہائشی شبنم نے اپنے پریمی کے ساتھ مل کر اپنے کنبے کے سات لوگوں کو کلہاڑی سے مار کر بے دردی سے قتل کردیا گیا تھا۔ اس معاملے میں، سپریم کورٹ نے شبنم کی سزائے موت کو برقرار رکھا ہے۔ صدر نے ان کی رحم کی درخواست بھی مسترد کردی ہے۔ لہذا آزادی کے بعد شبنم پھانسی پر چڑھنے والی پہلی خاتون قیدی ہوگی۔

اہم بات یہ ہے کہ متھورا جیل میں اسپیشل صرف خواتیں کے لیے پھانسی کا گھر تعمیر کیا گیا تھا۔ لیکن آزادی کے بعد سے کسی بھی عورت کو پھانسی نہیں دی گئی ہے۔ سینئر جیل سپرنٹنڈنٹ شیلندر کمار میتریہ نے کہا کہ ابھی پھانسی کی تاریخ طے نہیں ہوئی ہے ، لیکن ہم نے تیاری شروع کردی ہے۔ ڈیتھ وارنٹ جاری ہوتے ہی شبنم کو پھانسی دے دی جائے گی۔

error: Content is protected !!