Friday, February 26, 2021
malegaontimes

پاسپورٹ بنانے کے لئے اب سوشل میڈیا اکاؤنٹ کی بھی ہوگی جانچ

زیادہ تر لوگ بغیر سوچے سمجھے ہی سوشل میڈیا پر پوسٹ ڈال دیتے ہیں لیکن اس معاملے میں اب لوگوں کو الرٹ رہنے کی ضرورت ہے۔ جانے انجانے میں ہی ملک مخالف اور معاشرے کے خلاف تبصرہ آپ کو مستقبل میں دقت میں ڈال سکتا ہے اور آپ کو مشکلوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ آپ کو بتادیں کہ اتراکھنڈ پولیسپاسپورٹ درخواست اور اسلحہ لائسنس میں تصدیق کے وقت سوشل میدیا پر بھی شخص کا ریکارڈ گھنگال کر رپورٹ تیار کرے گی۔ اتنا ہی نہیں نوکری درخواست کے وقت بھی آپ کو ان مشکلات کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔ اس بابت اتراکھنڈ ڈی جی پی اشوک کمار نے سبھی پولیس افسران کو سخت ہدایات دی ہیں۔

اکثر یہ دیکھنے میں آتا ہے کہ کئی لوگ سوشل میڈیا جیسے کہ فیس بک، ٹویٹر اور وہاٹس ایپ پر ملک مخالف کئی پوسٹ کرتے ہیں جن پر اب لگام لگانے کیلئے سخٹ اقدام اٹھائے جا رہے ہیں۔ اتراکھنڈ ملک کے خلاف سوشل میڈیا میں پوسٹ کرنے والوں پر اب اور سخت ایکشن لے گی۔ حالانکہ اس سے پہلے صرف آئی ٹی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا جاتا تھا لیکن اب اگر ملک کے خلاف کوئی سوشل میڈیا پر کچھ لکھتا ہے تو اس کو یہ بہت بھاری پڑ سکتا ہے۔ یہی نہیں ہولیس ایسے پوسٹ کرنے والوں کو پاسپورٹ سے لیکر اسلحہ لائسنس اور نوکری تک سے محروم کر سکتی ہے۔



ڈی جی پی اشوک کمار نے بتایا کہ اگر کوئی پاسپورٹ یا اسلحہ لائسنس کیلئے درخواست دیتا ہے تو اس کی سوشل میڈیا اکاؤنٹ رپورٹ بھی دی جائے گی۔ اس سے پہلے صرف درج مقدموں کی جانکاری دی جاتی تھی۔ اگر کوئی بھی ایسی پوسٹ یا تبصرہ ان کے ذریعے کیا گیا ہے تو اس کی نگیٹو رپورٹ لگاکر اس کی درخواست کو رد کرنے کی سفارش کی جائے گی۔ اس سمت میں سبھی پولیس افسران کو ہدایات دی گئی ہیں۔ اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ اب اتراکھنڈ پولیس ایسے عناصر کے خلاف جم کر کارروائی کرے گی۔

mt ads

error: Content is protected !!