Wednesday, March 3, 2021
malegaontimes

پے ٹی ایم استعمال کرنے والوں کے بری خبر، اب دینا ہوگا ایکسٹرا چارج، جانئے پوری تفصیل

کورونا دور میں ، ملک میں ڈیجیٹل پیمینٹ میں نمایاں اضافہ ہوا ہے اور موبائل والیٹ کے استعمال میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ لوگوں نے گروسری اسٹورز سے سامان خریدنے ، بجلی سے پانی کے بلوں ، کتاب گیس سلنڈروں ، ریچارج موبائل اور ڈی ٹی ایچ ، یا آن لائن آرڈر کے لئے پے ٹی ایم والٹ کا استعمال بڑھایا ہے۔ لوگ پے ٹی ایم بٹوے میں رقم رکھ کر کریڈٹ کارڈ کے پیسوں سے لین دین کررہے ہیں۔ اگر آپ عام لین دین کے لئے بھی پے ٹی ایم کا استعمال کرتے ہیں تو پھر یہ آپ کے لئے اچھی خبر نہیں ہے۔ پے ٹی ایم کا استعمال ایک بار پھر مہنگا ہوگیا ہے

پے ٹی ایم ویب سائٹ کے مطابق ، اگر صارف کسی کریڈٹ کارڈ کے ذریعہ پی ٹی ایم والیٹ میں رقم جمع کرتا ہے تو اسے 2.5 فیصد اضافی چارج ادا کرنا پڑے گا۔ یہ اصول 15 جنوری 2021 سے نافذ ہے۔ اگر آپ امریکن ایکسپریس کے کریڈٹ کارڈ میں رقم جمع کرتے ہیں تو آپ کو 3 فیصد اضافی معاوضہ ادا کرنا پڑے گا۔ بہت سارے صارفین کا کہنا ہے کہ وہ پے ٹی ایم والیٹ میں کریڈٹ کارڈ شامل کرنے پر 2.07 فیصد ادا کرتے ہیں۔ ایک ہی وقت میں ، بہت سارے صارفین کا کہنا ہے کہ وہ 4.07 فیصد ادا کر رہے ہیں۔

اس سے قبل ، 15 اکتوبر 2020 سے ، اگر کوئی شخص پے ٹی ایم والیٹ میں کریڈٹ کارڈ کے ساتھ رقم جمع کرتا تھا ، تو اسے 2٪ اضافی چارج ادا کرنا پڑتا تھا۔ اگر آپ کریڈٹ کارڈ کے ساتھ پی ٹی ایم بٹوے میں 100 روپے شامل کرتے تھے تو آپ کو کریڈٹ کارڈ کے ساتھ 102 روپے کی ادائیگی کرنی ہوگی۔ تاہم ، کسی بھی مرچنٹ سائٹ پر Paytm سے ادائیگی کے لئے کوئی اضافی معاوضہ نہیں ہوگا۔



پےٹی ایم سے والیٹ میں ٹرانسفر کرنے کا کوئی معاوضہ نہیں ہے۔ ایک ہی وقت میں ، اس سے بھی کوئی معاوضہ نہیں ہوگا یہاں تک کہ اگر آپ ڈیبٹ کارڈ یا نیٹ بینکنگ کے ساتھ پے ٹی ایم والٹ میں رقم جمع کریں گے۔ اس سے قبل ، کمپنی نے 1 جنوری 2020 کو بھی قواعد میں تبدیلی کی تھی۔ کمپنی نے ایک مہینے کریڈٹ کارڈ میں 10 ہزار روپے سے زیادہ کا اضافہ کرنے کے لئے 2 فیصد وصول کرنا شروع کیا۔

mt ads

error: Content is protected !!