Thursday, February 25, 2021
malegaontimes

پیٹرول اور ڈیزل کے متعلق کانگریس کا مطالبہ ، وزیر اعظم نریندر مودی سے سوال

بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی کے باوجود کانگریس نے پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کے لیے حکومت کے خلاف محاذ کھول دیا ہے۔ کانگریس نے مطالبہ کیا ہے کہ پیٹرول اور ڈیزل کو جی ایس ٹی کے تحت لایا جائے ۔ کانگریس کے رہنما رندیپ سنگھ سرجے والا نے کہا ہے کہ پیٹرول ، ڈیزل اور ایل پی جی کی قیمتوں کو اگست 2004 کی سطح تک لانا چاہیے۔ جب خام تیل کی قیمت 40  ڈالر فی بیرل تھی۔

ذرائع کے مطابق اگست 2004 میں پیٹرول 36.81 اور ڈیزل 24.16 روپے فی لیٹر تھا۔ ایل پی جی سلینڈر کی قیمت 261.60 روپے تھی۔ لیکن اب پیٹرول ، ڈیزل اور ایل پی جی بالترتیب 75.78، 74.03 اور 593 میں فروخت ہورہے ہیں۔ سرجے والا نے پیٹرول اور ڈیزل پر 23.78 اور 28.37 روپے ایکسائز ڈیوٹی واپس لینے کا مطالبہ بھی کیا ، جس میں 6 سال میں اضافہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے 130 کروڑ شہری آج کورونا کی وبا سے لڑرہے ہیں۔ غریب، تارکین وطن مزدور، دکاندار، کسان، چھوٹے اور درمیانے تاجر اور بے روز گار افراد کی ایک بڑی تعداد معاشی بدحالی اور وبائی صورتحال کا مقابلہ کرتے ہوئے زندگی کے لیے جدوجہد کررہی ہے۔

کانگریس قائد نے کہا کہ اگر اس تناسب میں پیٹرول، ڈیزل اور ایل پی جی گیس کی قیمتوں میں کمی کی جائے تو اس میں آدھے سے بھی کم کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے سوال کیا کہ کیا وزیر اعظم مودی اور ان کی حکومت یہ بتائے گی کہ پیٹرول اور ڈیزل جس کی قیمت 20 روپے فی لیٹر سے بھی کم ہے اسے 75.78 اور 74.03 روپے فی لیٹر میں کیوں فروخت کیا جارہا ہے؟


error: Content is protected !!