Thursday, March 4, 2021
malegaontimes

بی جے پی کے ترجما ن کا کانگریس اور گاندھی فیمیلی پر سخت حملہ ، کہا کہ گاندھی فیمیلی نہ سوال سے مطمئن کرسکتی ہے نہ جواب سے

نئی دہلی : لداخ پرتشدد تنازعہ کیس میں بی جے پی صدر جے پی نڈا کے بعد پارٹی کے ترجمان سمبیت پترا نے بھی گاندھی فیمیلی کو نشانہ بنایا ہے۔ پاترا نے بدھ کے روز ایک پریس کانفرنس میں کانگریس پارٹی اور خاص طور پر گاندھی فیمیلی پر سخت حملہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ لداخ میں ہند چینی فوجیوں کے مابین پر تشدد کشمکش کی وجہ سے ایل اے سی پر تناؤ کے معاملے پر کل جماعتی اجلاس ہوا ، وزیر اعظم نے اس کے بعد ایک بیان دیا لیکن صرف ایک ہی خاندان ہے جس نے سوال بھی ٹھیک سے نہیں کیا اور نہ ہی جواب سے مطمئن کیا۔

اسی دوران پاترا نے بھی کانگریس اور اس کی پیشرو حکومت کے خلاف بھی بہت سارے سنگین الزامات عائد کیے تھے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کا کہنا ہے کہ وہ اس معاملے سے آگاہ ہیں۔ پاکستان اور چین اس علاقے میں بہت کچھ بنا رہے ہیں۔ آپ کو یہ معلوم تھا پھر کانگریس نے ایل اے سی کے ساتھ بنیادی ڈھانچہ کیوں نہیں تشکیل دیا۔ بی جے پی کے ترجمان نے کہا سابق وزیر دفاع اے کے انٹونی کہا کرتے تھے کہ اچھی پالیسی یہ ہے کہ سرحد پر ترقی نہ ہو۔ سال 2017 میں تمام اخبارات میں یہ خبر شائع ہوئی تھی کہ 1989، 1992، 2006 کے نظام سازی میں سیاچن گلیشیر پر ہندوستان اور پاکستان قریب متفق تھے۔ شیام سرن، شیوشنکر مینن اور منموہن سنگھ نے اپنی ناکامی کی کتاب جاری کی ہے۔ پاترا نے کہا کہ وہ سیاچن دینے جارہے ہیں لیکن گفتگو ناکام ہوگئی۔ ان تمام اوقات میں گاندھی فیمیلی کی حکومت تھی۔

Ad:


free-home-delivery


error: Content is protected !!