malegaontimes

جعلی خبروں کو روکنے کے لئے ٹویٹر نے اٹھایا یہ قدم

سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹویٹر نے جعلی معلومات کیخلاف ایک نیا فیچر متعارف کرایا ہے جس کا نام ‘برڈ واچ’ ہے اور نئے فیچر سے ٹوئٹس میں گمراہ کن اطلاعات کی نشاندہی کرنے میں صارفین کو مدد ملے گی۔ ٹوئٹر استعمال کرنے والے اب جھوٹی خبروں سے متعلق نوٹ بھی لکھ سکیں گے۔تفصیلات کے مطابق دنیا بھر میں جعلی خبروں کی وباء روز بروز بڑھتی جارہی ہیں جس کے باعث دنیا کے متعدد ممالک اس پر قابو پانے کے لیے کوششوں میں مصروف ہیں، اسی حوالے سے سوشل میڈیا کی مشہور ویب سائٹس فیس بک، انسٹا گرام، یویٹوب اور ٹویٹر بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں۔ٹوئٹر کے ‘برڈ واچ’ نامی اس نئے فیچر سے ٹوئٹس میں گمراہ کن اطلاعات کی نشاندہی کرنے میں صارفین کو مدد ملے گی۔ ٹوئٹر استعمال کرنے والے اب جھوٹی خبروں سے متعلق نوٹ بھی لکھ سکیں گے۔

ٹویٹر کے پروڈکٹس کے نائب صدر کیتھ کولمین نے کہا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ جب جھوٹی خبریں پھیل رہی ہوں تو ان کا تیزی سے جواب دینے کے لیے یہ طریقہ کارگر ثابت ہو گا۔ کمپنی غلط اطلاعات کی روک تھام کے لیے ایک موثر اور کمیونٹی پر مبنی حل’ تلاش کرنے کی کوشش کر رہی تھی تاکہ ایسی معلومات کو پھیلنے سے روکا جا سکے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق برڈ واچ کو ایک ایسے وقت لانچ کیا گیا ہے جب ٹوئٹر کو اپنے پلیٹ فارم کے ذریعہ گمراہ کن اطلاعات میں مسلسل اضافہ کے لیے نکتہ چینی کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے۔کمپنی نے ایسی اطلاعات پر قابو پانے کے لیے متعدد فیچر لانچ کیے ہیں۔ ان میں ٹوئٹس پر مینی پولیٹیڈ میڈیا’ کے نام سے لیبل اور ری ٹوئٹ کے متعلق ایک اضافی فیچر بھی شامل ہے۔ ٹوئٹر نے اس ماہ امریکا کے سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر پابندی عائد کرتے ہوئے گمراہ کن اطلاعات کے خلاف سخت پالیسی اختیار کرنے کا اشارہ دیا تھا۔

error: Content is protected !!